کمر درد کی آزمودہ دوائیں اور اس کا علاج

کمر درد کی آزمودہ دوائیں اور اس کا علاج

‘کمر کا درد” ایک بہت عام تکلیف ہے۔ ہر کوئی اس سے کبھی نہ کبھی ضرور متاثر ہوتا ہے۔ خاص کر بیٹھ کر کام کرنے والے اس کا زیادہ شکار ہوتے ہیں۔ کمر کے درد کے لیے بے شمار دوائیاں استعمال کی جاتی ہیں، جن میں چند ایک درج ذیل ہیں: بروفن (Brufen) بریکسین(Brexin) ڈائیکلوران (Dicloran) پونسٹان (Ponstan) مضر اثرات:mمتلی، قے، بے چینی، گھبراہٹmپیٹ میں گڑ بڑ، معدے میں جلن، لمبے عرصے تک کھانے سے معدے میں السر کا ہونا۔احتیاط:کمر درد کے لیے دوا ہمیشہ ڈاکٹر کے مشورہ سے لیں۔ کوئی بھی دوا زیادہ لمبے عرصے کے لیے استعمال نہ کریں۔ پیٹ میں جلن ہونے کی صورت میں دوا کا استعمال ترک کر دیں۔ دوا کی نوعیت اور ضرورت کی اہمیت :کمر درد سے ہر کسی کو پالا پڑتا ہے۔ زیادہ دیر تک بیٹھ کر کام کرنے والے آفس ورکرز اس کا جلدی شکار ہوتے ہیں۔ اچانک ہونے والا کمر درد کچھ دیر آرام کرنے یا درد کی کوئی دوا لینے سے خود بخود ٹھیک ہو جاتا ہے، لیکن لمبے عرصے تک رہنے والا کمر درد جو کسی بیماری کی وجہ سے ہو، یعنی شیاٹیکا یا کوئی انفکیشن وغیرہ تو اس کے لیے ضروری امر یہ ہے کہ پہلے تشخص کی جائے تا کہ کمر درد کا باعث بننے والی بیماری کا علاج کیا جا سکے۔ کمر کے درد کے لیے مختلف قسم کی دوائیں تجویز کی جاتی ہیں۔ یہ دوائیں درد دور کرنے میں اہم کردار ادا کرتی ہیں، لیکن دوا استعمال کرنے سے پہلے ڈاکٹر سے مشورہ کرنا ضروری ہے۔ آسان اور متبادل علاج: کمر کے درد کے علاج کے لیے سب سے پہلے اور ضروری امر یہ ہے کہ آفس ورکرز دیکھیں کہ ان کے بیٹھنے کے انداز میں کوئی خرابی تو نہیں ہے کیونکہ اگر آپ کی کرسی ٹھیک نہیں، تو آپ کو زیادہ جھک کر کام کرنا پڑے گا، جس کی وجہ سے کمر کے اوپری حصے میں درد اور تکلیف ہو گی۔ زیادہ دیر بیٹھنے والوں کو چاہیے کہ وقفے سے کام کریں۔ کچھ دیر کام کرنے کے بعد سستا لیں یا لیٹ کر کمر سیدھی کر لیں اور کچھ کام کھڑے ہو کر کریں۔ کمر کے درد سے چھٹکارا پانے کے لیے مندرجہ ذیل آزمودہ نسخے پر عمل کریں: آپ کا بستر سخت اور مضبوط ہونا چاہیے۔ اس کا آسان حل جو کسی بھی Orthopaedie یا سپیشل گدے سے زیادہ دیر پا اور آسان ہے وہ ہے ،بستر محمدی، یعنی فرش پر سونا۔ اس سے کمر سیدھی رہتی ہے اور درد میں بھی افاقہ رہتا ہے۔ صحت و تندرستی حاصل کرنے کا قدرتی ذریعہ صرف قدرتی غذاؤں کا استعمال ہے۔ کھانے میں زیادہ کھٹی اور گھی والی چیزیں استعمال نہ کریں۔ سوجی اور ادرک کاحلوہ بنا کر استعمال کریں۔ سونٹھ کا سوپ بنا کر پئیں اور اس کے ساتھ ابلی ہوئی مچھلی لیں۔ انجیر کھائیں۔ شدید درد کی صورت میں انجیر کے درخت کی چھال کی راکھ سرکہ میں حل کر کے کمر پر اس کی ہلکی مالش کریں، انشاء اللہ درد دور کرنے والی قیمتی کریموں سے زیادہ فائدہ ہو گا۔